تنقید کرنے والے بتائیں وہ ٹیکس بھی دیتے ہیں یا نہیں، وزیراعظم

خاران میں یک مچ خاران شاہراہ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کے دوران وزیر اعظم نے کہا کہ نواز شریف ترقی کا دوسرا نام ہے، ترقی جھوٹے وعدوں سے نہیں ہوتی، بلوچستان معدنی وسائل سےمالامال صوبہ ہے، 2013 سے پہلے بلوچستان میں بڑے بڑے منصوبے التوا کا شکار تھے، مسلم لیگ (ن) نے بلوچستان کی ترقی کے لئے جتنی کوششیں کیں اس کی مثال نہیں ملتی ، ہم نے ہمیشہ اس علاقے میں ترقی کی کوشش کی جس کو ضرورت ہو، آج بلوچستان میں بہترین شاہراہوں کا جال بچھایا جارہاہے، وہ وقت دور نہیں جب بلوچستان ملک کا امیر ترین صوبہ ہوگا۔

شاہد خاقان عباسی نے مزید کہا کہ پاکستان میں جمہوریت ہے اور رہے گی، ملک میں امن کے لیے فوج نے اپنی بھرپور کوششیں کیں اور اس کے لیے قربانیاں دیں، جس کی وجہ سے آج ملک میں امن ہے، ہمیں امن کے ساتھ ترقی کے عمل کو برقرار اور جاری رکھنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جولائی میں آئندہ 5 سال کے لیے پاکستان کے مستقبل کا فیصلہ ہوگا،ملک میں ایک طرف اس وقت گالیوں اور الزامات کی سیاست ہے تو دوسری طرف سچ اور خدمت کی سیاست ہے، گالیوں کی سیاست کو پاکستان کے عوام رد کرچکے ہیں اور جولائی میں بھی رد کریں گے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ وسائل کے بغیر ترقی ممکن نہیں ، وسائل کے لیے ٹیکس اصلاحات لائی جارہی ہیں، مسلم لیگ (ن)کی حکومت نے ٹیکس شرح کو آدھے سے بھی کم کردیا ہے ، ہم نے ٹیکس شرح کم کی تاکہ لوگ انکم ٹیکس اداکریں، تنقید کرنے والے بتائیں وہ ٹیکس دیتے ہیں یا نہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *